بیس-19

ریاضی - انٹرمیڈیٹ

عددی نظام۔

ہم روزمرہ کی ریاضی میں بیس-10 استعمال کرتے ہیں، تاہم کمپیوٹر بیس-2 استعمال کرتے ہیں۔ معلوم ہوا کہ قرآن کو بیس 19 کے ساتھ انکوڈ کیا گیا ہے۔

بعض ابواب ایسے حروف سے شروع ہوتے ہیں جن کا عربی میں کوئی معنی نہیں ہوتا:


Quran 26:1-4

ط، سین، میم، یہ واضح کرنے والی کتاب کی آیات ہیں۔ شاید آپ مایوس ہیں کہ وہ نہیں مانتے۔ اگر ہم چاہیں تو آسمان سے کوئی نشانی نازل کر دیں ان کی گردنیں اس کے لیے دبی ہوئی رہیں۔


١ طسم

٢ تِلْكَ آيَاتُ الْكِتَابِ الْمُبِينِ

٣ لَعَلَّكَ بَاخِعٌ نَفْسَكَ أَلَّا يَكُونُوا مُؤْمِنِينَ

٤ إِنْ نَشَأْ نُنَزِّلْ عَلَيْهِمْ مِنَ السَّمَاءِ آيَةً فَظَلَّتْ أَعْنَاقُهُمْ لَهَا خَاضِعِينَ


"ٹی اے ، دیکھا ، میم ، یہ واضح کتاب کی آیات ہیں" یہ آیت تینوں کے تین خطوط کا حوالہ دے رہی ہے ، دیکھا ، میم۔ ہم جانتے ہیں کہ قرآن مجید میں 6236 آیات ہیں تاہم یہ بیس 10 میں ہے۔ بیس 19 میں قرآن مجید میں H54 آیات ہیں۔

بیس 10 میں 6236 کو بیس 19 میں تبدیل کرنا

www.unitconversion.org:

تو قرآن کی بنیاد 19 میں H54 آیات ہیں۔

جب ہم ان حروف ( ط، سین، میم ) کو ان کی گنتی سے بدلتے ہیں تو ہمیں قرآن کی آیات کی تعداد بیس-19 H54 میں ملتی ہے ۔ یہ خاص بے معنی حروف ہیں اور پورے قرآن میں کتنی بار آئے ہیں:

اور بیس 19 میں ان کی گنتی یہ ہے:

ٹا، دیکھا، میم بیس-19 میں H54 نکلا ۔ یہ بیس 10 میں 6236 ہے (17x19x19 + 5x19 + 4) قرآن میں آیات کی صحیح تعداد۔

اگر پورے قرآن میں کہیں سے بھی ایک آیت کا اضافہ یا ہٹا دیا جاتا تو یہ ضابطہ ٹوٹ جاتا۔

" اگر ہم چاہیں تو آسمان سے کوئی نشانی نازل کر دیں کہ ان کی گردنیں دب کر رہ جائیں " تو 1400 سال بعد یہ آیت معجزہ ثابت ہوئی۔

1400 سال پہلے رہنے والے ان پڑھ آدمی کو بیس 19 کے بارے میں کیسے معلوم ہو سکتا ہے؟


Quran 74:30-31
اس پر انیس ہیں۔ ہم نے صرف فرشتوں کو آگ کے نگران مقرر کیا ہے اور ان کی گنتی کافروں کے لیے ٹھوکر کا باعث بنا دی ہے۔ تاکہ کتاب والوں کو یقین ہو جائے۔ اور جو لوگ ایمان لائے ہیں ان کے ایمان میں اضافہ ہو سکتا ہے۔ اور جن کو کتاب دی گئی ہے اور اہل ایمان شک نہیں کریں گے۔ اور جن کے دلوں میں بیماری ہے اور کافر کہیں گے کہ اس تمثیل سے اللہ کا کیا ارادہ ہے؟ اس طرح اللہ جسے چاہتا ہے گمراہ کرتا ہے اور جسے چاہتا ہے ہدایت دیتا ہے۔ تیرے رب کے لشکروں کو اس کے سوا کوئی نہیں جانتا۔ یہ انسانوں کے لیے ایک یاد دہانی کے سوا کچھ نہیں۔


٣٠ عَلَيْهَا تِسْعَةَ عَشَرَ

٣١ وَمَا جَعَلْنَا أَصْحَابَ النَّارِ إِلَّا مَلَائِكَةً ۙ وَمَا جَعَلْنَا عِدَّتَهُمْ إِلَّا فِتْنَةً لِلَّذِينَ كَفَرُوا لِيَسْتَيْقِنَ الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ وَيَزْدَادَ الَّذِينَ آمَنُوا إِيمَانًا ۙ وَلَا يَرْتَابَ الَّذِينَ أُوتُوا الْكِتَابَ وَالْمُؤْمِنُونَ ۙ وَلِيَقُولَ الَّذِينَ فِي قُلُوبِهِمْ مَرَضٌ وَالْكَافِرُونَ مَاذَا أَرَادَ اللَّهُ بِهَٰذَا مَثَلًا ۚ كَذَٰلِكَ يُضِلُّ اللَّهُ مَنْ يَشَاءُ وَيَهْدِي مَنْ يَشَاءُ ۚ وَمَا يَعْلَمُ جُنُودَ رَبِّكَ إِلَّا هُوَ ۚ وَمَا هِيَ إِلَّا ذِكْرَىٰ لِلْبَشَرِ


آپ کاپی، پیسٹ اور شیئر کر سکتے ہیں... 

کوئی کاپی رائٹ نہیں 

  Android

Home    Telegram    Email
وزیٹر
Free Website Hit Counter



  Please share:   

Free AI Website Builder